(جملہ حقوق بحق ناشر محفوظ ہیں)

روزمرہ زندگی کی مصروفیات کی وجہ سے ہمارا نظام زندگی تبدیل ہو تا رہتا ہے۔انسان کا جس طرح کا جینے کا اندا ز ہو گا،ویسی ہی اس کی صحت ہو گی۔سب سے اہم چیز،جو ہماری صحت کو متاثر کرتی ہے۔وہ ہے خوراک،اب اگر خوراک ناقص ہے،تو بھی فائدہ نہیں،ساتھ ہی اگر کسی کی معدہ خراب ہو جائے تو اسے اگر گوشت بھی کھلایا جائے،تو فائدے کی بجائے نقصان دہ ثابت ہو گا۔وہ افراد جو معدے کی تکلیف میں مبتلاہیں۔انہیں ہر وقت کھٹی ڈکاریں،متلی کا ہونا،گیس اور پیٹ میں ایک بوجھ سا محسوس ہوتا ہے۔جو کہ عام زندگی کی سرگرمیوں میں رکاوٹ بنتا ہے۔

علامات:

معدے خراب ہونے علامات مختلف ہو تی ہیں۔کچھ لوگوں کو کھٹی ڈکاریں،بدہضمی، متلی اور قے،سینے میں جلن،گیس کا ہو نا،منہ کا ذائقہ کڑوا محسوس کرناہیں۔

وجوہات:

سب سے اہم بات جو تمام امراض میں نوٹ کی جاتی ہے،وہ ہے ہمارا زندگی گزارنے کا نظام کیسا ہے۔دوسری اہم بات کھانے کی کوالٹی اور مقدارکیا ہے؟جو لوگ تیز مرچ مصالحے استعمال کرتے ہیں۔گوشت اور مرغن غذائیں کھاتے ہیں۔اسی طرح جو افراد فاسٹ فوڈزfast foods) (جیسے برگر،شوراما،پیزا بکثرت کھاتے ہیں۔ان کو معدہ کی تکلیف ہو سکتی ہے۔حد سے زیادہ چائے کا استعمال کرنا،کیفین کی مقدار معدے کو خراب کرتی ہے،بھوک سے بڑھ کر کھا لینا،مثلا آپ کو بھوک کے دوران طلب دو روٹیا ں کھانے کی تھی اور آپ دو کی بجائے تین یا چار کھالیں۔اس سے معدے کی تکلیف ہونے کا امکان بڑھ جاتا ہے۔اس بات کو سمجھنے کے لیے ایک مثال ہے۔فرض کریں ایک برتن ہے،جس کی گنجائش،ایک کلو پانی ڈالنے کی ہے۔اب اس میں مقررہ مقدار سے زیادہ پانی بھرنے سے اضافی پانی اس میں جذب نہیں ہو گا،یہی حال معدہ کا ہے۔یہ بھی ایک برتن نما مشین ہے۔جو خوراک کو ہضم کرکے جسم کے دوسرے اعضاء کو توانائی فراہم کرتی ہے۔

اپنے طور پر دوائیاں کا استعمال کرنا،جیسے ہمارے ہیں لوگ دوسروں سے سن کر خود سے علاج شروع کر دیتے ہیں۔جیسے پیناڈول،پیراسیٹامول،سر درد کیلئے،پین کلر گولیاں کا استعمال کرنا،اسی طرح جو لو گ دیگر بیماریا ں کی وجہ سے ادویات کھاتے ہیں اس سے بھی معدہ خراب ہونے کی شکایت ہو سکتی ہے۔

وزن کا بڑھ جانا،موٹاپا ہو جانا،چربی کی زیادتی،کولیسٹرول میں اضافہ بھی اس کی وجہ بن سکتی ہے۔

۶۔جو لوگ سگریٹ نوشی،شراب،کولڈ ڈرنک کے عادی ہیں،منشیات کے عادی افراد کو معدے کے مسائل ہو سکتے ہیں۔

۔دفاتر کے اندر بیٹھ کر کام کرنے والے افراد،اسی طرح وہ افراد جو سارا دن بیٹھے رہتے ہیں اور جسمانی ورزش نہیں کرتے،انہیں مختلف امراض لگ سکتے ہیں۔

 



ٓاحتیاط:

وہ افراد جن کو معدہ کے خراب ہونے کا مسلہ ہے،انہیں چاہیے کہ ٹھنڈی اشیا،جیسے آئس کریم،مشروبات سے پرہیز کریں۔گھی سے بنی ہوئی اشیا سے اجتناب کریں،معدے کے السر والے افراد،مرچ مصالحے اور مرغن غذائیں سے اجتناب کریں۔

تشخص و علاج:ماہر ڈاکٹر سے بات کریں،وہ آپ کی تمام صورت حال کو دیکھ کر،جو دوائی تجویز کرے اس کے مطابق علاج کروائیں۔خود سے ٹوٹکے،نسخے استعمال کرنے سے احتیاط کریں۔

تحریر: راشد    دلاور

 آپ کو ہماری یہ تحریر کیسی لگی اس کے متعلق ہم کو بتائیں۔اس کو پسند (Like)بھی کریں اور شیئر Share and subscribe))بھی کریں۔شکریہ

   https://urdu680.blogspot.com

email: informativecontent125@gmail.com

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *