Wars and Pandemic

1918 کا Spanish Flue ، تاریخ میں مہلک ترین و عالمگیر وبا تھی ، ایک اندازے کے مطابق دنیا بھر میں 500 million لوگ جو کہ اُس وقت کی آبادی کا ایک تہائی فیصد تھے متاثر ہوئے – اس میں675,000 امریکیوں سمیت 5million افراد ہلاک ہوے۔ Spanish Flue سب سے پہلے یورپ ، امریکہ اور ایشیا کے چند حصّوں سے ہوتا ہوا  دنیا بھر میں تیزی سے پھیل گیا ۔ اس وقت ، اس فلو کا علاج کرنے کے لئے کوئی مؤثر ادویات یا ویکسین دستیاب نہیں تھی- شہریوں کو ماسک پہننے کا حکم دیا گیا ، اسکول ، تھیٹر اور کاروبار بند کردیئے گئے۔ لوگوں میں علانات کروائے گئے کہ وہ مصافحہ (handshake avoid) کرنے سے گریز کریں اور گھر کے اندر ہی رہیں(stay at home)، تُھوکنے (spitting) پر پابندی عائد کردی گئی۔ اور اس کو Sanitary Code کی خلاف ورزی قرار دے دیا گیا۔

For more exciting stuff please subscribe to our Facebook Page

Spanish Flue کی علامات (symptoms)

Spanish Flue کی پہلی لہر موسم بہار میں واقع ہوئی تھی اور یہ اتنی شدید نہیں تھی اس کے مریضوں کے علامات (symptoms) جاڑا (chills)، بخار (fever) اور تھکاوٹ تھے۔ شروع میں اس بیماری سے اموات کا تناسب زیادہ نہیں تھا۔ مگر اسی سال کے خاتمے میں Spanish Flue کی ایک دوسری ، لہر نمودار ہوئی ۔اور اس لہرسے متاثرین میں علامات پیدا ہونے کے کچھ  ہی گھنٹوں میں اُن کی جلد نیلی ہونے لگی اور اُن کے پھیپھڑوں میں پانی بھرنے کے باعث ان کا دم گھٹنے سے اموات واقع  ہونا شروع ہوگئیں۔

Spanish Flue کا علاج موجود نہ ہونے اورغلط ادویات کا استعمال

اس بیماری کی وجوہات معلوم نہ ہوسکیں البتہ Spanish Flue کی تشخیص سب سے پہلے امریکہ، یورپ اور ایشیا کے چند علاقوں میں ہوئی اور چند ہی ماہ کی مُدت میں یہ پوری دنیا میں پھیل گیا۔ ڈاکٹروں اور سائنس دانوں سے Spanish Flue کے علاج کیلئے کوئی صورت نہیں نکل پا رہی تھی ۔ ڈاکٹروں نے ایسی دوائیں تجویز کرنی شروع کر دیں جو انھوں نے محسوس کیا کہ اِس Spanish Flue کی علامات کو ختم کردیں گے… بشمول اسپرین (asprin)۔ اس قسم کی غلط ادویات کے استعمال نے اموات میں مزید تیزی پیدا کر دی۔ دوسری طرف کچھ علاقوں کے ہسپتال (Hospital) فلو کے مریضوں سے اس قدر بھر گئے کہ وہاں اسکولوں اور دیگر عمارتوں کو عارضی اسپتالوں میں تبدیل کرنا پڑا ، ان میں سے کچھ میڈیکل سٹوڈنٹس کے زیر انتظام تھے۔

Spanish Flue کی ہلاکتیں World War-1 کی ہلاکتوں سے زیادہ تھیں

Spanish Flue کا ایک غیر معمولی پہلو یہ تھا کہ اِس نے بہت سے صحت مند نوجوانوں کو مار ڈالا جن پرعام طور پہ اِس قسم کی بیماری زیادہ اثر انداز نہیں ہوتیں (ammunity factor). ان اموات میں پہلی جنگ عظیم (World War-1) کے متعدد خدمت گار بھی شامل ہیں۔ جنگ عظیم (World War-1) کے دوران Spanish Flue سے ہلاک ہونے والے امریکی فوجیوں کی تعداد جنگ میں مارے جانے والے امریکی فوجیوں کے مقابلے میں زیادہ ہے ۔ U.S. Navy کا چالیس فیصد (%40) جبکہ فوج کا (%30)تیس فیصد بیمار ہوگیا، اورپُرہجوم بحری جہازوں اور ٹرینوں کے ذریعہ دنیا بھر میں منتقل ہونے والے فوجیوں نے اس وائرس کو پھیلنے میں مدد فراہم کی (virus carrier)۔

Spanish Flue کا نام Spain کے نام پر اِس لیے نہیں ہے کہ اس ابتدا اسپین (spain) سے ہوئی ہے۔

پہلی جنگ عظیم کے دوران ، اسپین ایک آزاد میڈیا کے ساتھ اُس جنگی ماحول میں ایک  غیر جانبدار ملک تھا جس نے اِس وبا کے ابتدائی اوائل سے اس کے خاتمے تک اپنے میڈیا کے ذریعے اس وبا کی رپورٹنگ کرتا رہا ، مئی 1915 کے آخر میں میڈرڈ میں اس کے بارے میں پہلے اطلاع دی۔ جبکہ دوسری جانب، اتحادی ممالک (Allied Countries) اور وسطی طاقتوں (Central Powers)  نے اس جنگ کے دوران Spanish Flue کی خبر کو Sensor کیے رکھا تاکہ افواج کے حوصلے کو بلند رکھا جاسکے ۔  اور چونکہ صرف ہسپانوی (Spanish) خبروں کے ذرائع اس فلو کی اطلاع فراہم کر رہے تھے، اس وجہ سے بہت سے لوگوں کا خیال تھا کہ اس کی ابتدا وہاں ہوئی ہے۔

ہسپانوی(Spanish)، یقین رکھتے ہیں کہ یہ وائرس فرانس سے آیا ہے اور  وہ اِسے “فرانسیسی فلو” (French Flue) کہتے ہیں۔

Germany, Austria-Hungary, Bulgaria and the Ottoman Empire (the Central Powers) fought against Great Britain, France, Russia, Italy, Romania, Japan and the United States (the Allied Powers)

کرونا COVID-19 اور حالیہ جنگی صورتحال

آج دنیا ایک بار پھر جنگ کی لپیٹ میں ہے اور ممالک کے درمیان خلشیں بڑھتی جا رہی ہیں جس کی تفصیلات کے بیان کی اس جگہ ضرورت نہیں اور coronavirus نے بھی انہی حالیہ جنگوں کے درمیان سر اُٹھا رہا ہے۔ تاریخ اپنے آپ کو دھراتی ہوی محسوس ہوتی ہے۔ کیا انسان کی تارِیخ صرف Archieves کے لیے ہے، کیا انسان عبرت کے لفظ کے معنی سے ناواقف ہے؟

For more exciting stuff please subscribe to our Facebook Page.

 

One thought on “Wars and Pandemic-Urdu (Similarities between Spanish Flue and COVID-19)”

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *